39

چینی کی قیمتیں گرنے لگیں، عوام میں خوشی اور ذخیزہ اندوزوں میں کھلبی

کراچی: کرشنگ سیزن کے آغاز کے بعد 200 روپے فی بوری چینی کی قیمتیں‌کم ہونے کا امکان‌ ہے. گنے کی نئی فصل تیار ہوگئی ہے، جس سے تیار ہونے والی چینی جلد مارکیٹ میں آ جائے گی، اور اس سے چینی کی خوردہ اور تھوک قیمتوں میں‌واضح کمی واقع ہوگی.
ذرائع کے مطابق، نئے سیزن میں زیادہ پیداوار ہونےاور گنے کے مارکیٹ میں‌ آنے کے بعد، چینی کی کمی کی اطلاعات نے سٹے باز اور ذخیرہ اندوزوں‌کی نیندیں حرام کر دی ہیں. ذخیرہ اندوذوں نے نئی ذخیرو اندوزی بند کر دی ہے، اور مارکیٹ میں چینی فی کلو، 4 سے 6 روپے فی کلو کم ہونے کا بھی امکان ہے. مل قیمت کی کم ہو کر صرف 62 روپے تک ہونے کا امکان ہے، جس سے 50 کلو کی بوری بھی 3000 یا 3200 تک کی ہو جائے گی.
ذخیرہ اندوذوں نے اپنا پرانا سٹاک مارکیٹ میں مہنگے داموں نکالنے کے لیے چینی کے مزید مہنگا ہونے کی افواہیں مارکیٹ میں‌پھیلانا شروع کر دی ہیں خوردہ فروشوں میں تو پریشانی کی لہر دوڑ گئ ہے، مگر ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق، شوگر ملز نے چینی کے جلد سستا ہونے کا امکان بتایا ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں