2016 decline of terrorism in pakistan 16

2016 میں گزشتہ سال کے مقابلے تشدد کے واقعات میں 45 فیصد کمی آئی

منگل کو جاری ایک کی گئی رپورٹ کے مطابق پاکستان میں تشدد سے منسلک اموات میں گزشتہ سال کے مقابلے 2016 میں 45 فیصد نمایاں کمی واقع ہوئی، 2015 میں 4،647 کے مقابلے 2016 میں 2،610 لوگوں نے تشدد کے واقعات میں زندگی کھو دی یہ رپورٹ تحقیق و مطالعہ سلامتی مرکز (سی آر ایس ایس) نامی ادارہ کی طرف سے جاری کی گئی.” تشدد سے منسلک اموات میں کمی کا رجحان 2014 سے جاری ہے جس میں 45 فیصد کمی 2016 میں آئی ” رپورٹ میں کہا گیا. 2014 کے بعد تقریبا 66 فیصد کی مجموعی کمی واقع ہوئی ہے. پاکستان آرمی نے شمالی اور مغربی قبائلی علاقوں میں عسکریت پسندوں کے اڈوں کو ختم کرنے کے لیے آپریشن ضرب عضب جون 2014 ء میں شروع کیا گیا تھا جس سے عسکریت پسندوں کی مالی مدد کرنے والے ذرائع کو ختم کردیا گیا.سی آر ایس ایس کی رپورٹ کے مطابق، پنجاب اور بلوچستان میں 2016 کے دوران تشدد کے واقعات میں معمولی اضافہ ہوا ہے.گزشتہ کے دوران صوبے بلوچستان میں اموات کی سب سے زیادہ تعداد تھی- بلوچستان میں تشدد سے متعلق اموات میں گزشتہ سال تقریبا 10 فیصد کا اضافہ ہوا، پنجاب کو بھی گزشتہ سال چار سال کے مقابلے میں سب سے زیادہ اموات کا سامنا کرنا پڑا.دونوں صوبوں کو خودکش حملوں کا نشانہ بنایا گیا.بلوچستان میں دہشت گردوں نے تین خودکش حملے کیے جس میں 186 لوگوں نے زندگی کھو دی.پنجاب میں ایک خود کش حملہ ایک پارک میں کیا گیا جس میں بہت سے بچوں سمیت 75 افراد جاں بحق ہوئے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں