5

گردوغبار کی کمی سے چین میں فضائی آلودگی میں اضافہ-بی بی سی


تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption چین میں فضائی آلودگی سے ہر سال 16 لاکھ افراد ہلاک ہو جاتے ہیں

عام طور پر گردوغبار کو ماحولیات کے لیے مسئلہ تصور کیا جاتا ہے لیکن چین کی فضا میں اس کی کمی کی وجہ سے فضائی آلودگی کا مسئلہ بڑھ گیا ہے۔

ایک تازہ تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ فضا میں کم گرد وغبار کا مطلب زمین کی سطح پر زیادہ شمسی تابکاری پہنچنا ہے جس سے ہوا کی رفتار کم ہو جاتی ہے۔

ہوا کی کمی کے نتیجے میں چین کے کثیر آبادی والے حصے میں فضائی آلودگی بڑھ جاتی ہے۔

٭ فضائی آلودگی کا تعلق قطب شمالی میں برف کی کمی سے

٭ بیجنگ میں نئے سال پر آتش بازی سے گریز کی اپیل

ریسرچ کرنے والوں نے یہ بھی پتہ لگایا ہے کہ فضا میں گرد و غبار کی سطح میں کمی کے سبب خطے میں انسان کی پیدا کردہ آلودگی میں 13 فیصد اضافہ ہوجاتا ہے۔

فیکٹریوں اور کوئلے کے بجلی گھروں سے نکلنے والی فضائی آلودگی سے پورے چین میں لاکھوں افراد متاثر ہو رہے ہیں۔

مختلف مطالعوں سے پتہ چلتا ہے کہ چین میں فضائی آلودگی سے ہر سال 16 لاکھ افراد ہلاک ہو جاتے ہیں جو کہ تمام ہلاکتوں کا 17 فیصد ہے۔

لیکن نئی تحقیق میں پتہ چلا ہے کہ گوبی ریگستان سے آنے والے قدرتی گردو غبار سے انسان کی پیدا کردہ آلودگی کے حالات بدتر یا بہتر ہو رہے ہیں۔

خطے میں 150 سال کے ہوا اور گرد وغبار کے پیٹرن کی نقل کے ماڈل کے ذریعے محققین نے یہ دریافت کیا کہ فضا میں موجود دھول یا گرد وغبار سے سورج کی روشنی کی اہم مقدار منتشر ہو جاتی ہے۔

اس کی عدم موجودگی میں سورج سے آنے والی گرمی زمین سے زیادہ مقدار میں ٹکراتی ہے۔ زمین اور سمندر کے درجۂ حرارت میں فرق کے نتیجے میں ہوائیں چلتی ہیں۔ دھول کے بغیر زمین زیادہ گرم ہو جاتی ہے اور اس سے سمندر کے مقابلے میں درجۂ حرارت کے فرق میں تبدیلی آتی ہے اور نتیجتاً ہوا کی رفتار میں کمی آتی ہے اور فضائی آلودگی میں اضافہ ہوتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption محققوں کا خیال ہے کہ فضا میں گردوغبار کی مقدار اور فضائی آلودگی کی سطح میں ایک تعلق ہے

امریکی ریاست واشنگٹن میں پیسفک نارتھ ویسٹ نیشنل لیبارٹری سے منسلک اور اس تحقیق کے سربراہ مصنف یانگ یانگ نے کہا 'گرد و غبار کے دو ذرائع ہیں۔ ایک گوبی اور دوسرا شمال مغربی چین کا سطح مرتفع ہے لیکن ہم نے یہ دیکھا ہے کہ گوبی کے اثرات زیادہ ہیں۔

'فضا میں کم دھول کی موجودگی کے نتیجے میں زیادہ شمسی تابکاری زمین کی سطح تک پہنچتی ہے۔ اس سے زمین اور سمندر کے درجۂ حرارت کے فرق میں کمی آتی ہے اور ہوا کا بہاؤ متاثر ہوتا ہے، جس سے مشرقی چین کی فضا میں جمود طاری ہونے لگتا ہے اور اس کے نتیجے میں فضائی آلودگی جمع ہونا شروع ہو جاتی ہے۔'

گردو غبار کے پیدا ہونے میں کافی کمی آئی ہے اور یہ عمل کم و بیش ایک تہائی کم ہو گیا ہے۔ اس کے تناسب میں ہوا کی رفتار پر بہت کم اثرات مرتب ہوئے ہیں یعنی ایک میل فی گھنٹے کے دسویں حصے کی کمی واقع ہوئی ہے۔

بہر حال اس طرح کی چیز جب ایک بڑے خطے میں وسیع پیمانے پر رونما ہوتی ہے تو ہوا کی رفتار میں تھوڑی سی کمی بھی جاڑے کے موسم میں مشرقی چین کی فضائی آلودگی میں 13 فیصد اضافہ کا سبب بن جاتی ہے۔

حال ہی میں ہونے والی ایک دوسری ریسرچ میں بتایا گیا ہے کہ قطب شمالی کی برف میں روز آفزوں کمی چین کی فضائی آلودگی کا اہم سبب ہے۔

اور نئی تحقیق کے مصنفین کا کہنا ہے کہ دونوں نظریات درست ہو سکتے ہیں اور دونوں کے نتیجے میں ہوا کی رفتار میں کمی واقع ہوتی ہے۔

View Source

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں